بری سوچ کا برا اثر کیسے ہوتا ہے؟ Motivation

Life Changing Article In Urdu. Positive Soch Insan Per kia Asar Dalti Hai ? Motivation Quotes In Urdu On Success.How To Think Positive Urdu Tips.

! اسلام علیکم دوستو

دنیا میں ایسے لوگ کم نہیں ہیں جو اپنے آپ کو دوسروں سے بدقسمت اور کمزور سمجھتے ہیں ۔

سوال پیدا ہوتا ہے کہ وہ ایسا کیوں سمجھتے ہیں صرف اس لیے کہ دنیا میں انہیں وہ سہولتیں میسر نہیں ہوتی ہیں جو دوسروں کو ہوتی ہے۔

Motivation Quotes In Urdu

آپ نے دیکھا ہوگا جب کبھی بھی کسی چیز یا اچھی سہولت کا ذکر آئے تو ہم لوگ یہی کہتے ہیں یہ تو امیر لوگوں کے چونچلے ہیں ہمارا اسے کیا تعلق۔

اس سے ہوتا یہ ہے کہ اندر سے ہم لوگ مایوسی کا شکار ہو رہے ہوتے ہیں  انسان کے دماغ کی خاصیت بالکل ویسی ہی ہوتی ہے جیسے کسی ملک کے سربراہ کی ملک کے سربراہ کی طرح ہمارا دماغ بھی ہمارے جسم کو کنٹرول کرتا ہے۔

یا ہم یہ کہ سکتے ہیں کہ ہمارا ذہن بنجر زمین کی طرح ہے اور خیالات بیج کا کام کرتے ہیں اگر ہم زمین میں گندم بوئیں گے تو گندم ہی کاٹیں گے ۔

ٹھیک اسی طرح ہم اپنے ذہن میں جیسے برے خیالات کی پرورش کریں گے ہماری شخصیت اور ذات پر ویسا ہی اثر ہوگا ۔

خیالات

یہی حقیقت ہے کہ ہمارے خیالات ہمیں بناتے اور بگاڑتے ہیں اس لئے ضروری ہے کہ ہم اپنے ذہن میں ہمیشہ مثبت خیالات کو جگہ دیں ۔

آپ اگر ذرا ٹھنڈے دماغ سے سوچیں تو معلوم ہوگا کے آپ کی غربت اور مفلسی کا سب سے بڑا سبب منفی خیالات ہیں۔

آپ  اس لیے غریب ہیں کہ آپ نے ذہنی طور پر اس حقیقت کو قبول کر لیا ہوا ہےاس سے نجات حاصل کریں کامیابی آپ کے قدم چومے گی۔

اب اس کا یہ مطلب نہیں کہ آپ آنکھیں بند کر کے یہ سوچنے لگ جائیں کہ میں لاکھ پتی بن جاؤایسا ہرگز نہیں ہوگاہر ایک کو زندگی میں بےپناہ جدوجہد کرنی پڑتی ہےتب کہیں جاکر وہ مقام انسان حاصل کرتا ہے۔

آپ کی سوچ آپ پر کیا اثر ڈالتی ہے

آپکی سوچ ہی آپ کی شخصیت ہےانسان کی سوچ فکر اور طریقہ عمل اس کی زندگی میں جس قدر اہم کردار ادا کرتا ہےپر دوسرا عنصر نہیں۔

سوچ کو ہم انسان سے الگ نہیں کر سکتے ہیں اس لئے جس انسان میں کوئی سوچ نہیں کسی کام کی فکر نہیں دراصل وہ انسان ہی نہیں۔

آپ کا مستقبل آپ کی کوششوں کا مرہون منت ہےجتنی کوشش آپ کرتے ہیں اتنا ہی بہتر مستقبل آپ پاتے ہیں ایک بات ذہن میں رکھیں کہ یہ ممکن نہیں کہ دنیا میں کو انسان ایسے ہو جس میں کوئی خامی نہ ہو۔

تاریخ کے بڑے بڑے ہیرو لیڈر حکمران دولتمند اور دانشورجن کے کارناموں سے آج ہم سبق حاصل کرتے ہیں ان کو بھی بہت ساری رکاوٹیں آئی ان سے بھی غلطیاں ہوئیں لیکن پھر بھی اتنے سال گزر جانے کے بعدبے ہم انہیں یاد کرتے ہیں اور ان کے کارنامے سنتے ہیں ۔

کیونکہ انہوں نے اپنی غلطیاں تسلیم کرکے ان سے سبق حاصل کیا اور زندگی میں سہی فیصلوں کی تعداد کو غلط فیصلوں سے کم کیا ہمارے ۃاں پڑھے لکھے محنتی لوگ ناکام ہونے کے بعد ہتھیار ڈال دیتے ہیں اور اپنی زندگی کو جہنم بنا لیتے ہیں۔

آپ کا مقصد کیاہے

اگر کوئی شخص چاہتا ہے اس کا خیال خواہش جنون میں بدل جائے تو اس کا صرف ایک ہی طریقہ ہے

کہ انسان اپنا مقصد ایک کاغذ پر لکھےپھر دن میں کم از کم دس باراس کو اونچی آواز میں پڑھے بار بار پڑھنے سے آپ کا مقصد ذہن میں نقش ہوگا

کچھ لوگ اس بات کا رونا روتے ہیں کہ زندگی میں اچھےمواقع نہیں ملےمیں ان سے یہی کہوں گا بڑے لوگوں کی زندگی پر نظر ڈالیں تو انہیں موقع آسمان سے حاصل نہیں ہوئے تھےبلکہ انہوں نے اپنی جرات ہمت اور خود اعتمادی سے پیدا کئے

اگر آپ بھی دنیا میں ترقی اور کامیابی کے ہاواں ہیں تو اٹھے اور اپنے خوایش کو مکمل کرنے کے لیے کمر کس لیں خدا محنت کرنے والوں کا ساتھ دیتا ہے موقع خود پیدا ہوتے چلے جاتے ہیں۔

امید ہے کہ اپ کو ضرور کچھ ہمت ملی ہو گی اس ارٹیکل سے اگر کوئی رائے ہے تو ہمیں ضرور کمنٹ میں لکھیں

اگر یہ آرٹیکل آپکو اچھا لگا ہے تو واٹس ایپ پر اپنے کسی دوست کے ساتھ اس کو ضرور شیئر کریں۔

بہترین گفتگو کر کے ہر کسی کو اپنا دیوانہ بنائیں یہاں کلک کر کے  ہمارا یہ ارٹیکل پڑھیں آپ کی ضرور مدد کرے گا

 

 

 

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *