ٹرمپ نے بدترین تباہی کا آغاز کردیا

Tension Between USA and Turkey Over Andrew Burnson Pastor Arrest.Turkey And America Ki War Main Pakistan Per Asraat..

2016 میں ترکی میں ایک ناکام فوجی بغاوت ہوئی جس کا الزام فتح اللہ کولن پر لگایا گیا جو اس امریکا میں آسائلم لے کر بیٹھا ہوا ہے کچھ مہینے بعد ترکی میں ایک امریکی پادری کو گرفتار کیا گیا

 اور پتہ چلا کہ وہ سی آئی اے کا جاسوس ہےاور  ترکی میں ناکام فوجی بغاوت کے پیچھے اس کا بہت بڑا ہاتھ تھا پادری کا نام اینڈریو پر میسن ہے۔  ٹرمپ نے انکار کردیا ہے کہ پادری سی  آئی اے کا ایجنٹ نہیں ہے۔ اور نہ ہی وہ  سی آئی اے  کے لیے کام کرتا ہے

بالکل اسی طرح جب ریمنڈیوس پکڑا گیا تھا  تو اس وقت  اوباما نے پوری دنیا کے سامنے جھوٹ بولا تھا کہ وہ ایک سفارتکار ہے۔جب کے وہ بلیک واٹر کا ایجنٹ تھا۔ وہ پشتو ایسے بولتا  تھا جیسے ہم پاکستانی اردو بولتے ہیں۔

جب کے وہ شلوار قمیض  اور ٹوپی پہن کر کافی عرصے سے کر پٹھان بن کر جاسوسی کر تارہ جب کہ وہ سی آئی اے راہ کے مشن میں تھا جب کے اس نے امیر حافظ سید کو مرنے کا پلین بنایا تھا اور وہلاہور مکی مسجد قادسیہ میں حملہ کرنا چاہتا تھاجہاں وہ نماز جمعہ کا خطبہ دیتے ہیں

وہاں کی خوفیہ تصاویر ریمنڈیوس کے کمرے سے ملی۔ اس نے پلین بنایا تھا کہ کیسے القادسیہ کو بوم سے اڑانا ہے۔ اور کیسے ان سب کو مرنا ہے۔ اس لیے وہ یہاں آئے تھے۔
اسی طرح ترکی نے سی آئی اے کا ایجنٹ پکڑ لیا۔ ان کے پاس سارےثبوت ہے۔ اور ان نے عدالت میں پیش کر دیے۔ ہیں۔ عدالت نے اس کو رہا کرنے سے منع کردیا ہے۔ اکتوبر میں اس کو 35 سال کی سزا ہونے والی ہے۔

ٹرمپ نے کہا ہے کہ پادری ایک اچھا عیسائی ہے اور میں اکھری دمکی دے رہا ہو اگر ترکی نے اس پر پابندی لگائی یاں اس کو سزا ہوئی تو ترکی کا وہ حال ہو گا کہ وہ سہ نہیں پائے گا

ترکی ہماری طرح نہیں تھا۔جب ریمنڈیوس پکڑاگیا  تو جنرل پاشا نے سٹینڈ لے لیا مگر نون لیگ پنجاب کے حکومت زرداری کی حکومت  اور جنرل کیانی امریکا کے آگے لیٹ گیا۔

یہی وہ وقت تھا جب نون لیگ اور جنرل پاشا کی لڑائی ہوئی۔ جنرل پاشا نے کہا میں اس کو نہیں چھوڑوں گا

تب چوہدری نثار نے جنرل پاشا آئی ایس آئی آنکھوں کیوں دیکھا رہا ہے۔ جنرل پاشا نے جو کہا وہ جو آج تک منظر عام پر نہیں آیا تھا۔ چوہدری نثار نے کہا تھا کہ آپ نون لیگ کو سپورٹ کریں۔ تو جنرل پاشا نے کہا۔

اگر زندگی میں کسی کو سپورٹ  کرنا ہوتا تو میں  عمران خان  کو جو پاکستان کو آگے لے جا سکتا ہے

یہ تھی وہ بات جس کی وجہ سے نون لیگی 5  سال تک جنرل  پاشا اور آئی ایس آئی کو گالیاں دیتے رہےکہ انہوں نے نواز شریف کا ساتھ دینے کیوں انکار کیا
جب آئی ایس آئی کو پتا چلا تو ان نے جنرل پاشا کو کہا کے آپ رلیز کیوں نہیں دیتے۔

تو جنرل  پاشا  نے کہا  کے میرا بوس نہ بنوں۔میرا بوس اللہ ہے۔ امریکا نہیں تب سے نون لیگ آئی ایس آئی کے ساتھ مل کے  جنرل پاشا کے خلاف اتنی کمپین چلائی جس کے پیچھے سے اصل مقصد آئی ایس آئی کو بدنام کرنا تھا
مگر جنرل پاشا نے رٹائر ہونے کے بعد بھی سی آئی اے  کے ایجنٹ کو چون چون کے پکڑوایا کس طرح پکڑوایا یہ ایک الگ  داستان ہے اور سی آئی اے کے ایجنٹ غدار حسین کیانی نے   ایک رات میں چار ہزار سے جاری کرکے بلایا تھا ۔

شاہ محمود قریشی کی بھی  لڑائی اسی لیے  ہوئی تھی کے زرداری نہیں چاہتے تھے کہ ریمنڈ ڈیوس پاکستان میں رہے۔

اس لیے ان نے سب کچھ چھوڑ دیا اور ترکی میں کوئی نون لیگی زرداری بولا نہیں اس لئے انہوں نے سی آئی اے کے ایجنٹ کو چھوڑنے کی شرط رکھی ہے کہ گولر کو ہمارے حوالے کیا جائے معاملہ

انتہائی سنگین ہوتا چلا جا رہا ہے۔ لیکن ترکی نے امریکا  کی آنکھوں  میں  آنکھیں  ڈال کر بات کر رہے ہے۔ انشاءاللہ جلد ہی آپ کا عمران خان اور طیب  اردگان ایک ساتھ نظر آئیں گی ترکی کے ترکی کے حالات بدترین ہونے والے ہیں

اگر پاکستان ترکی  کا ساتھ دے گا تو پاکستان کے خالات بھی خراب ہو گئے یعنی پاکستان ترکی کی سیدھا سیدھا جنگ امریکہ کے ساتھ ہونے جارہی ہے
یہ ہی موقع ہے کہ ہم نے امریکہ کے خلاف نیکسس بنا کر لڑنا ہے پوری پاکستانی قوم یا جانلے کے اب ایک ہونے کا موقع گیا ہے۔

اور اللہ کے آسرے پہ ہم نے ایک دوسرے کا ساتھ دینا ہے

ۡیہ بھی پڑھیں کہ

 Z نام والے لوگ کیسے ہوتے ہیں

گفتگو کا ایسا طریقہ جو ہر کسی کا دیوانہ بنا دے

دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *